؟بلیو وہیل، کیا، کہاں، کون

بلیو وہیل، کیا کیسے کون

کچھ عرصہ سے یہ نام انٹرنیٹ پر جگہ جگہ گردش کرتا نظر آرہا ہے، کہا جا رہا ہے کہ یہ ایک خونی گیم ہے جو اپنے صارف کو اپنے چُنگل میں پھنسا کر اس سے الٹے سیدھے کام لیتی ہے ، ایسے کام جو ایک سدھ بدھ رکھنے والا شخص نہیں کرتا لیکن یہ گیم اتنا طاقتور ہے کہ بہت سے لوگ کیا چھوٹے کیا بڑے اس کے چُگل میں پھنس کر رہ جاتے ہیں اور اس کا آخری نتیجہ عموماً یا بالخصوص خود کُشی کی شکل میں نکلتا ہے وغیرہ وغیرہ۔ جتنے منہ اتنی باتیں۔یہانٹرنیٹ پر پاکستان اور بھارت سمیت پوری دنیا میں اس "چیز” بارے متعدد خیالات موجود ہیں لیکن   اس سب کو دیکھ کر اس جنگل کی وہ کہانی یاد آجاتی ہے  جس کے بارے مشہور تھا کہ وہاں جو جاتا ہے زندہ بچ کر وااپس نہیں آتا ، تو جب زندہ بچ کر واپس نہیں آتا  تو اس جنگل بارے بتایا کس نے؟ ان کی روحوں نے؟ اسی طرح بلیو وہیل کی کہانی ہے جس کے بارے میں یہ کہا جائے کہ اب تک کہ تمام تر خیالات اور من گھڑت  کہانیوں کے باوجود بھی بلیو وہیل وہ نہیں ہے جو کہ کہا جا رہا ہے۔

بلیو وہیل کیا ہے؟

بلیو وہیل گیم نہیں ہے، بلیو وہیل کوئی موبائل ایپلی کیشن بھی نہیں ہے اور بلیو وہیل کوئی ویب  سائٹ بھی نہیں ہے، آسان الفاظ میں بلیو وہیل  مجسم حالت میں کہیں موجود نہیں ہے۔ اگر آپ اس خوش فہمی میں مبتلا ہیں کہ کل جو پلے سٹور سے آپنے گیم ڈاؤنلوڈ کی وہ بلیو وہیل ہے تو اس خوش فہمی کو یہی دور کر دیں کیونکہ بلیو وہیل  اس وقت انٹرنیٹ یا سطحی (Surface Web) طور پر کہیں موجود نہیں کیونکہ بلیو وہیل انٹرنیٹ کا حصہ نہیں ہے۔بلیو وہیل در حقیقت  ایک کیفیت ہے جسے ایک ایک قدم چل کر حاصل کیا جاتا ہے، بلیو وہیل ایک روسی سافٹ ویئر ڈیویلپر فلپ بیدوکِن نے 2013 میں تیار کی تھی جس کی اس وقت وہ جیل بھگت ہے۔

بلیو وہیل کہاں ہے؟

جس طرح ہر چیز کے دو رُخ ہوتے ہیں اسی طرح   World Wide Web (جسے عرف عام میں وہ جگہ کہا جاتا ہے جہاں کوئی بھی چیز آنلائن دستیاب ہوتی ہے ) کے بھی دو رخ ہیں، ان دو میں سے ایک وہ انٹرنیٹ ہے جس کا استعمال کر کے آپ یہ بلاگ پڑھ رہے ہیں اور دوسرے وہ ہیں جس کا کسی سرچ انجن جیسے گوگل، یاہو یا بِنگ  پر کوئی وجود نہیں، عرفِ عام میں وہ  آنلائن جگہیں  جن کو آپ کہیں تلاش نہیں کر سکتے ، ایسی جگہوں کے لئے تاریک ویب (Dark Web) کی اصطلاح استعمال کی جاتی ہے۔تاریک ویب تک جانے کے لئے ایک پراجیکٹ اس وقت انٹرنیٹ پر موجود ہے جسکا ذکر بہتری کے لئے یہاں کرنا مناسب نہیں۔ خیر لوگ عموماً  اسی تاریک ویب کا استعمال کر کے انجان لوگوں سے بات کرتے ہیں، اور اس تاریک ویب پر آپ نہیں جان سکتے کہ آپ کس سے بات کر رہے ہیں وہ کہاں ہیں جب تک وہ خود آپ کو اپنے بارے نہ بتا دے۔ یہ بلیو وہیل بھی وہیں موجود ہے اس لئے  وہ لوگ جو یہ سوال کرتے ہیں کہ اگر یہ گیم اتنا خطرناک ہے تو اس کو بنانے والے کو پکڑتے کیوں نہیں تو عرض ہے کہ جب آپ جانتے ہی نہیں کہ وہ کون ہے تو پکڑ کیسے سکتے ہیں۔

بلیو وہیل کے نشانے پر کون لوگ ہیں؟

اس کے نشانے پر وہ نوجوان لوگ ہیں جن میں خودداری  اور عزتِ نفس کی کمی ہے وہ اس کے نشانے پر ہیں،  آپ سے آپ کے بارے میں معلومات لی جاتی ہیں اور ان معلومات  کے ذریعے اس  بلیو وہیل کے منتظمیں صارف کو بلیک میل کرتے ہیں، ان کے خواب، ان کے ذاتی معاملات کے ساتھ کھیلا جاتا ہے جس سے صارف ذہنی دباؤ کا شکار ہو جاتا ہے، پھر صارف کو مختلف قسم کی ذہنی طور پر تنگ کر دینے والی فلمیں دیکھنے کو  کہا جاتا ہے، پھر فیصلہ کیا جاتا ہے کہ کس صارف کو کس قسم کے غلط کام کا چیلنج دینا ہے، یہ چیلنج خود کو معمولی نقصان پہنچانے سے لیکر خودکشی تک ہو سکتا ہے اور اس سب کی وڈیو ز بنا کر منتظمین حاصل کرتے ہیں جن کو بعد میں صارفین کے خلاف ہی استعمال کیا جاتا ہے۔بلیو وہیل  کا نام در حقیقت اس چیلنج سے نکلا ہے جس میں صارف کو ایک غاذ پر بلیو وہیل بنا کر بعد میں اپنے جسم پر کسی چھری یا چاقو سے بنانے کی ترغیب دی جاتی ہے۔

چونکہ بلیو وہیل کسی ایپلی کیشن، یا وائرس یا گیم کی شکل میں موجود نہیں ہے اس لئے آپ اپنے بچوں کو یہ نہیں کہہ سکتے کہ بلیو وہیل سے دور رہیں، جیسا کہ ہمارے بچپن میں ہمیں کہا جاتا تھا کہ اجنبی لوگوں سے دور رہو ویسے ہی اپنے بچوں کو بتائیں اور سکھائیں کہ وہ اجنبیوں سے دور رہیں، ڈارک ویب ایک انٹرنیٹ براؤزر کے ذریوے کام کرتا ہے اس لئے کوشش کریں کہ کوئی آپکو کسی ایسی چیز کا لنک پیغام میں بھیجے جس کا سرچ انجن ہپر کوئی ذکر نہیں ہے تو ممکنات میں سے ہے کہ وہ پتا آپکو سیدھا تاریک ویب تک لے جائے گا اور وہاں جو بھی ہیں سب اجنبی ہیں کیونکہ نہ آپکو علم ہے کہ آپ کہاں ہوتے ہیں نہ ہی آپکو یہ معلوم ہوتا ہے کہ آپ سے کچھ کہنے یا آپ سے کچھ کروانے والا کون ہے۔

Comments